گزارہ کے بارے

اس جگہ حضور اقدسﷺ نے تنگی کی حالت میں جو جو چیزیں استعمال یا نوش فرمائی ہیں ان کا ذکر یہاں مقصود ہے

1۔ ابن سیرین کہتےہیں کہ ہم ایک مرتبہ ابوہریرہ رضی اللہ تعالی عنہہ کے پاس تھے ان پر ایک لنگی اور ایک چادر تھی وہ دونوں کتان کی تھیں اور گیروی رنگ میں رنگی ہوئی تھیں ابوہریرہ نے ان میں سے ایک سے ناک صاف کیا پھر تعجب سے کہنے لگے کہ اللہ اللہ آج ابوہریرہ کتان کے کپڑوں سے ناک صاف کرتا ہے اور ایک وہ زمانہ تھا کہ جب میں منبر نبویﷺ اور حضرت عائشہ رضی اللہ تعالی عنہا کے حجرہ کے درمیان شدت بھوک کی وجہ سے بے ہوش پڑا ہوا تھا اور لوگ مجھے مجنوں سمجھ کر میری گردن کو پاوں سے دباتے تھے اور حقیقتہ مجھے جنون وغیرہ کچھ نہیں تھا بلکہ شدت بھوک کی وجہ سے یہ حالت ہو جاتی تھی

2۔ مالک بن دینار فرماتے ہیں ک حضور اقدسﷺ نے کبھی روٹی اور گوشت سے شکم سیری نہیں فرمائی مگر حالت ضغف پر مالک بن دینار فرماتے ہیں کہ میں نے ایک بدوی سے ضغف کے معنی پوچھے تو اس نے لوگوں کے ساتھ کھانے کے معنے بتائیے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے