نفل نمازیں

نماز پنجگانہ کے علاوہ کچھ خاص یا خاص مقاصد کیلے نفل نمازوں کی فضیالت بھی احادیث مبا رکہ میں آئی ہے جن میں سے معر وف یہ ہیں
نماز تہجد:
اس کا بہترین وقت صبح سےتھوڑاپہلے رات کا آخری حصہ ہے آپ ّکا معمول آٹھ ر کعات کاتھا یہ نماز آپ کے لیے فرض تھی امت کےلیے نفل اور انتہائی بافضیلت نماز ہے
اشراق :
اس نمازکا وقت سورج طلوع ہوکرکچھ بلند ہو جانے سےلےکرتقر یبا اڑھائی گھنٹے تک ہےچار یادورکعتیں
چاشت:اشراق کا وقت ختم ہونے سے پر اس کا وقت شروع ہوجاتاہے اور د وپہر سے پہلے تک باقی رہتاہےچار یادورکعتیں
اوا بین:
مغرب کے فرض اورسنتوں کے بعد چار سے لےکربیس رکعات تک نوافل کی ادا ءیگی نمازاوا بین کہلاتی ہے
نماز توبہ :
عمومی گنا ہوں پر یا کسی خاص گناہ پر اپنی توبہ کو موثر بنانے کے لیے دو چار رکعات نماز پڑھ کر خوب گڑ گڑا کر معافی مانگی جاے اس کا کوئی وقت مقرر نہیں

نماز حاجت: کسی میں بات ایک طرف نہ لگ رہی ہو راے میں استحکام نہ آ رہا ہو نفع نقصان واضح نہ ہو رہا ہو تو دو شقوں میں سے ایک کی تعیین میں اللہ سے مدد مانگنے کے لیے یہ نماز ہے اس میں دو رکعت یکسوئی کے وقت مثلا سوتے وقت پڑھنا اور اس کے بعد مسنون دعا استخارہ پڑھی جاتی ہے

صلاِۃ التسبیح : یہ پسندیدہ نفل نماز ہے جس کی تاکید آپﷺ نے اپنے چچا حضرت عباس کو کی تھی اور جس پر ہر قسم کے صغیرہ گناہوں کی معافی کی فضیلت بتائی گئی ہے