سورۃ بقرہ اور سورۃ فاتحہ کا تحفہ

حضرت ابن عباس رضی اللہ عنہہ سے روایت ہے وہ بیان کرتے ہیں کہ ایک روز جبرائیل بنی کریم ﷺ کے پاس بیٹھے ہوئے تھے کہ انہوں نے اوپر سے دروازہ کھلنےکی آواز سنی اپنا سر اٹھایا اور نبی کریمﷺ کو بتایا کہ یہ آسماتوں کے دروازوں سے ایک دروازہ ہے جو پہلے کبھی نہیں کھلا اس سے ایک فرشتہ نازل ہوا ہے جو آج سےپہلے کبھی زمین پر نازل نہیں ہوا اس نے آپ ﷺ کی خدمت میں سلام عرض کیا ہے اور کہا ہے آپ ﷺ کو دو نور مبارک ہوں آپ ﷺ سے پہلے یہ نور کسی نبی کو نہیں نازل ہوئے وہ یہ ہیں سورۃ فاتحہ اور سورۃ بقرہ کی آخری دو آیات مزید فرمایا جو شخص یہ آیات پڑھے اسے اس کی مانگی ہوئی چیز ضرور عطا کی جائے گی