بندے کی توبہ پر اللہ تعالی کی خوشی

اللہ اپنے مومن بندہ کی توبہ پر اس آدمی سے زیادہ خوش ہوتا ہے جو ایک سنسان اور ہلاکت خیز میدان میں ہو۔اس کے ساتھ اس کی سواری ہو جس پر اس کا کھانا پینا ہو اور پھر وہ سو جائے اورجب بیدار ہو تو دیکھے اس کی سواری جا چکی ہے وہ اس کی تلاش میں نکلے یہاں تک کہ اسے سخت پیاس لگے پھر وہ کہے میں اپنی جگہ پر سو جاوں گا یہاں تک کہ مر جاوں پس اس نے اپنے سر کو اپنی کلائی پر رکھا اورجب بیدار ہوا تو اس کی سواری اس کے پاس کھڑی تھی اس پر اس کا زاد راہ اور پینا ہوتو اللہ تعالی مومن بندے کی توبہ پر اس آدمی کی سواری اور زاد راہ ملنے سے زیادہ خوش ہوتا ہے
صیحح مسلم جلد سوم توبہ کا بیان