عقائد کی اغلاط

1۔ مشہور ہے کہ جو شخص نیا مسلمان ہو اس کو مسہل دینا چاہیے ورنہ وہ پاک نہیں ہوتا سو یہ بات بے اصل ہے
2۔ مشہور ہے کہ گالی دینے سے چالیس روز تک ایمان سے دور ہو جاتا ہے اگر اس مدت میں مر جاوے تو بے ایمان مرتا ہے سو یہ محض غلط ہے ہاں گالی دینے کا گناہ الگ بات ہے
3۔ عوام الناس ممانی، چچی اور سوتیلی ساس سے نکاح کرنے کو جائز نہیں سمجھتے سو یہ اعتقاد باطل ہے
4۔ مشہور ہے کہ سوتے میں قطب شمالی کی طرف پاوں نہ کرے سو اس کی کوئی اصل نہیں
5۔ مشہور ہے کہ ہاتھ میں بید رکھنا درست نہیں یزید نے ہاتھ میں رکھا تھا یہ بھی غلط ہے
6۔ مشہور ہے کہ میاں بیوی ایک پیر کے مرید نہ ہوں ورنہ بہن بھائی بن جاتے ہیں یہ بھی غلط ہے
7۔ مشہور ہے کہ رات کے وقت درخت نہ ہلائے کہ وہ بے چین ہوتا ہے یہ بھی غلط ہے
8۔ بعضے وبا یا ویسی ہی بیماری میں باعتقاد بھینٹ بکرا ذبح کرتے ہیں یہ شرک ہے یا بعضے باعتقاد فدیہ بکرا ذبح کرتےہیں یہ بھی غلط ہے
9۔ مشہور ہے کہ چودھویں صدی کے بعد کا کوئی بیان نہیں آیا اس کی اصل نہیں روایت میں کسی صدی کی کوئی تخصیص نہیں آئی۔
10۔ بعض جگہ پھیلی ہوئی وبا دور کرنے کے لئے بستی و آبادی کے چاروں طرف کثرت سے دودھ ڈالتے ہیں یہ بھی غلط ہے