اغلاط العوام

بعد بحمد و الصلوۃ بالاظہار یہ امر ہے کہ باوجود اس کے کہ اس وقت بفضلہ تعالی علم دین کا سامان کثرت سے ہے مگر باوجود اس کے پھر اکثر عوام بلکہ بعض خواص کالعوام میں بھی ایسے غلط مسئلے مشہور ہیں جن کی کوئی اصل شرعی نہیں اور وہ ان کا ایسا یقین کئے ہوئے ہیں کہ ان کو اس میں شبہ بھی نہیں پڑتا تاکہ علما سے تحقیق ہی کر لیں اور اکثر علما کو بھی ان غلطیوں میں عوام کے مبتلا ہونے کی اطلاع نہیں تاکہ وہی وقتا فوقتا ان کا ازالہ کرتے ہیں جب نہ عوام کی طرف سے تحقیق ہو اور نہ علما کی طرف سے تنبہہ ہو تو ان غلطیوں کی اصلاح کی کوئی صورت ہی نہ رہی