حیض اور استحاضہ کے احکام

حیض کی تعریف: ہر مہینے بالغ عورت کو جو خون آتا ہے اسے حیض کہتے ہیں بشرطیکہ وہ ہیمار، حاملہ یا بہت بوڑھی نہ ہو

مدت حیض: حیض کی کم سے کم مدت تین دن تین رات ہے اس سے ذرا بھی کم ہوا تو وہ حیض نہیں استحاضہ ہے حیض کی زیادہ سے زیادہ مدت دس دن دس راتیں ہے اگر اس سے ذرا بھی زائد ہو گیا تو وہ حیض نہیں استحاضہ ہے

استحاضہ کی تعریف: ہیماری وغیرہ کی وجہ سے جو خون آتا ہے اسے استحاضہ کہتے ہیں اسی طرح حیض کے اصل خون سے پہلے اور بعد میں جو زائد خون آتا ہے اسے استحاضہ کہتے ہیں

حیض کا رنگ: سرخ، زرد، سبز، خاکی یعنی مٹیالا اور سیاہ رنگ حیض میں آ سکتا ہے جو کپڑا یا گدی وغیرہ رکھی ہو جب تک وہ سفید دکھائی دے کہ جیسی رکھی تھی ویسی ہی ہے تو اب حیض سے پاک ہوگی

حیض کی ابتدائی اور انتہائی عمر: حیض کی ابتدائی عمر نو برس ہے نو برس سے پہلے کسی کو حیض نہیں آتا اور انتہائی عمر پچپن سال ہے اور یہ عام طور پر ایک معمول ہے لیکن اس کے بعد آنا بھی ممکن ہے اس لیے اگر پچپن سال کے بعد خون آ جاے تو اگر خون سرخ یا سیاہ ہو توحیض ہے اور اگر اس کے علاوہ ہو تو استحاضہ ہے اور یہ کہ پہلے سے اس کا خون آنے کی عادت نہ ہو اگر حیض کے زمانہ میں بھی اس عورت کو یہ رنگ آیا کرتا تھا تو یہ حیض ہی سمجھا جاے گا