وہ مجبوریاں جن کی وجہ سے تیمم کرنا جا ئز ہے

ان کی پانچ اقسام ہیں

۱۔ پانی چاروں طرف سے کم از کم ایک میل دور ہو
۲۔ پانی تو موجود ہے لیکن خطرہ ہے کہ اگر پانی استعمال کر لیا تو بیمار ہو جاوَں گا یا بیماری بڑھ جاَےّ گی ب معذور ہو جاوّں گا یا مر جاوّں گا
۳۔ پانی تو موجود ہے لیکن خطرہ ہو کہ وضو یا غسل کر لیا تو بعد میں سخت پیاس لگنے کی صورت میں اور پانی نہیں ملے گا
۴۔ پانی تو بہت ہو لیکن اسے حاصل نہ کر سکتا ہو۔جیسے کنویں کے کنارے کھڑے ہوں لیکن ڈول وغیرہ نہ ہو یا موٹر لگی ہو لیکن بجلی نہ ہو [یہ ذہن میں رہے کہ پانی چاروں طرف سے کم از کم ایک میل دور ہو]
۵۔ جب ایسی نماز کے ضائع ہونے کا خطرہ ہو جس کی قضا نہیں تو پانی کے باوجود تیمم کرنا جائز ہے مثلا نماز جنازہ یا نماز عید کے لیے جائیں اور دیکھیں کہ نماز ہو رہی ہے اور اگر وضو کرنے چلے گئے تو نماز ختم ہو جاےّ کی تو وضو کی بجاےّ تیمم کر سکتے ہیں