احادیث نبوی ﷺ میں زنا کے نقصانات او ر وعیدیں

حضور اکرم ﷺ نے ارشاد فرمایا۔

اَلنِّسَاءُ حَبَا ءِلُ الشَیْطَانِ۔

(رواھ احمد والشا فعی والدارمی والنسا ئ ورواہ البخاری)
ترجمہ۔عورتیں شیطان کے پھندے ہیں۔
یعنی جس طرح شکاری جال اورپھندے لگا کر اپنے شکار کو پھنساتا ہے اسی طرح شیطان بے حیا اور بے پردہ عورتوں کے ذریعے مردوں کوگمراہ کر کے اپنا شکار بنا کر انہیں دوزخ کا ایندھن بناتا ہے۔غیرمحرم عورتوں سے اس طرح احتیاط کرنا ضروری ہے جس طرح دشمن کے پھندے سے۔
۱۔ جب آدمی زنا کرتا ہے تواس سے ایمان نکال لیا جاتا ہے اور وہ سائبان کی طرح رہتا ہے جب و ہ چھوڑ دیتا ہے تو دوبارہ آجاتا ہے۔ (رواہ ابوداؤد)
۲۔ جناب رسول اللہ ﷺنے (لمبی حدیث میں) فرمایا کہ رات کو مجھے دو آدمی ارض مقدسہ لے گئے( آگے فرمایا) ہم تنور جیسی جگہ پر گئے تو وہاں آوازیں اور شور ہو رہا تھا فرمایا جب ہم نے اندر جھانک کر دیکھا تو اندر ننگے مرد اور ننگی عورتیں جب ان کے نیچے سے آگ کا شعلہ آتا تو وہ چیختے ہیں پھر آخر میں فرمایا یہ مرد اور عورتیں وہ تھیں جو زنا کیا کرتے تھے۔(رواہ البخاری زواجر ص ۲۲۰ج۲)
۳۔ فرمایا اے لوگوں کی جماعت !زنا سے بچو کیونکہ اس میں چھ چیزیں (نقصانات والی) ہیں تین دنیا میں اور تین آخرت میں دنیا کے تین نقصانات یہ ہیں ۱۔زانی مرد اور عورت کے چہرے کی رونق ختم ہو جاتی ہے۔
۲۔ غربت پید اہو جاتی ہے
۳۔عمر کم ہوتی ہے۔
آخرت میں پیش آنے والی تین چیزیں یہ ہیں
۱۔اللہ کی ناراضگی
۲۔برا حساب
۳۔دوزخ کا عذاب(زواجر ص ۲۱۸،ص۲)
۴۔ جناب رسول اللہ ﷺ نے فرمایا ساتوں آسمان ساتوں زمینیں بوڑھے زانی پر لعنت کرتے ہیں اور فرمایا بے شک زنا کرنے والوں کی شرمگاہوں کی بد بو سے دوزخیوں کو تکلیف دی جائے گی۔(رواہ البزاز ،زواجر ص ۲۲۲ج ۲)
۵۔ فرمایا ہمیشہ شراب پینے والاجو مرا اللہ تعالیٰ اس کو نہر غوطہ پلائیں گے ۔پوچھا گیا وہ کیا ہے؟ تو فرمایا زانیہ عورتوں کی شرمگاہوں سے چلی ہوئی نہر ہے ان کی بدبو سے دوزخیوں کو تکلیف دی جائے گی۔(زواجر ص ۲۲۲ ج ۲)
۶۔ حضرت انس بن مالکؓ نے جناب رسول اکرم ﷺ کا ارشاد نقل کیا ہے کہ زنا پر اصرار کرنے والابت پرست کی طرح ہے۔
(ترغیب و الترہیب ج۳ ص۲۲۰)
۷۔ جناب رسول اکرم ﷺ نے فرمایا کہ آدمی کا دس عورتوں سے زنا کرنا اپنی پڑوسن کے ساتھ زنا کرنے سے ہلکا ہے۔
(رواہ احمد بسند رواۃ ثقات زواجر ص ۲۲۳،ج ۲)
۸۔ جناب رسول ﷺ نے فرمایا بے شک ابلیس زمین میں اپنا لشکر بھیجتا ہے اور ا ن سے یہ کہتا ہے جو تم میں کسی مسلمان کو زیادہ گمراہ کرے گا سو اس کو میں تاج پہناوٗں گا تو ایک شیطان جا کر کاروائی سناتے ہوئے کہتا ہے میں فلاں کے ساتھ مسلسل لگا رہا یہاں تک کہ اس نے اپنی بیوی کو طلاق دے دی تو وہ ابلیس کہتا ہے یہ تو کوئی کمال نہیں وہ پھر کسی اور سے شادی کرے گا پھر دوسرا آتا ہے اور کہتا ہے کہ میں فلاں کے ساتھ مسلسل لگا رہا یہاں تک کہ اس کے اور

اس کے بھائی کے درمیان دشمنی ڈال دی تو وہ ابلیس کہتا ہے یہ تو تونے کچھ نہ کیا عنقریب وہ صلح کر لیں گے پھر ایک شیطان آ کر کاروائی سناتا ہے کہ مسلسل زنا کروانے کی کوشش کرتا رہا یہاں تک کہ انہوں نے زنا کر لیا تو ابلیس کہتا ہے کہ یہ تو نے اچھا کیاتو اس کو قریب کرکے تاج پہناتا ہے۔
(زواجر ص ۲۲۵،ج۲)
۹۔ جناب رسول اللہ ﷺ نے فرمایا شرک کے بعد اللہ تعالیٰ کے ہاں سب سے بڑا گناہ آدمی کا اس عورت کے رحم میں نطفہ ڈالنا جو اس کے لئے حلال نہ تھی۔ (زواجر ص ۲۳۵،ج ۲)
۱۰۔ جناب رسول اللہ ﷺ نے فرمایا بے شک جس آدمی نے شادی شدہ عورت سے زنا کیا تو ایسے زانی اور زانیہ پر اس امت کا آدھا عذاب ہو گا۔(زواجر ص ۲۲۵،ج۲)
۱۱۔ جناب رسول اللہ ﷺ نے فرمایا جس آدمی نے اپنا ہاتھ ایسی عورت پر رکھا جو اس کے لئے حلال نہ تھی او رشہوت کے ساتھ رکھا تو قیامت کے دن وہ اس حال میں آئے گا کہ اس کا ہاتھ اس کی گردن کی طرف بندھا ہو گا اور اگر اس نے عورت کابوسہ بھی لیا تو اس کے دونوں ہونٹ کٹ کر جہنم میں گریں گے اور اگر اس نے زنا بھی کر لیا تو قیامت کے دن اس کی ران بول کر گواہی دے گی کہ مجھ پر حرام کام کیا گیا تو اللہ تعالیٰ غصہ کی نظر دیکھیں گے تو اس کے چہرے کا گوشت گر پڑے گا تو وہ کہے گا میں نے نہیں کیا تو زبان بھی بول پڑے گی آگے اسی طرح سارے اعضاء کے بولنے کا ذکر ہے۔(زواجر ص ۲۲۵،ج۲)
۱۲۔ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا جو کسی محرم کے ساتھ زنا کرے تو اسے قتل کر دو۔
(رواہ الحاکم)(زواجر ص ۲۶۶،ج۲)
۱۳۔ حضرت ابو امامہؓ فرماتے ہیں کہ سرکار دو عالم ﷺ کا ارشاد ہے خدا کی قسم جب کوئی شخص کسی غیر محرم کے ساتھ خلوت میں جمع ہوتا ہے تو شیطان اس کے ساتھ ساتھ داخل ہوتا ہے ایک ایسا خنزیر جو نجاست میں لت پت ہو اس سے مس کر لینا اتنا برا نہیں جتناغیر محرم کے کندھے سے کندھا مل جانا۔
۱۴۔ حضرت انسؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا سب سے زیادہ جوگناہ انسان کو جہنم کا مستحق بناتے ہیں وہ زبان اور شرمگاہ کے گناہ ہیں۔
۱۵۔ حضرت ابو ہریرہؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا جس نے زنا کیا یا شراب پی یا چوری کی ،تو اس نے اسلام کی رسی اپنی گردن سے نکال دی۔
۱۶۔ حضرت ابن عباسؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا جس کسی شہر میں زنا اور سود عام ہو جائیں تو ان لوگوں پر اللہ کا عذاب نازل ہو جانا حلال ہوجاتا ہے۔(ترغیب والترہیب ص ۲۲۰،ج۳)
۱۷۔ حضرت ابو قتادہؓ بیان کرتے ہیں کہ سرکار دوعالم ﷺ نے فرمایا جو ایسی عورت کو بستر پر لٹائے جس کا خاوند موجود نہیں یعنی کہیں سفر پر گیا ہوا ہے یا اس کی عدم موجودگی سے فائدہ اٹھانا چاہتا ہے تو قیا مت میں ایسے شخص کے لئے ایک اژدھا مقرر کیا جائے گا یہ کالا سانپ اس کو ڈسے گا۔
(ترغیب والترہیب ص ۲۲۰،ج۳)
۱۸۔ حضر ت ابو امامہؓ کی روایت ہے کہ رسول اکرم ﷺ نے ارشاد فرمایا اپنی نگاہ کو روکو اور شرمگاہ کی پوری حفاظت کرو ،ورنہ خدا تمہاری صورتیں بگاڑ دے گا۔
۱۹۔ حضرت میمونہؓ فرماتی ہیں کہ حضور اکرم ﷺ نے ارشاد فرمایا یہ امت ہمیشہ خیریت سے رہے گی اور اس پر رحمت ہمیشہ سایہ فگن ہو گی جب تک ان میں ولدالزنا کی کثرت نہ ہو گی جب حرام کی اولاد کثرت سے پیدا ہونے لگے گی تو پھر اندیشہ ہے کہ تمام امت پر عذاب نازل ہو جائے۔(مسنداحمد۶/۳۳۳)
۲۰۔ حضرت انسؓ فرماتے ہیں رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا میری امت کے اعمال ہر جمعہ کے دن (اللہ کے اورمیرے سامنے) پیش کئے جاتے

ہیں اور اللہ تعالیٰ سب سے زیادہ زانیوں پر غضب ناک ہوتے ہیں۔
۲۱۔ حضر ت ابو ہریرہؓ سے روایت ہے جناب رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا ایمان کا ایک لباس ہے اللہ تعالیٰ جس کو چاہتے ہیں لباس پہناتے ہیں جب کوئی انسان زنا کرتا ہے تو اس سے ایمان کا لباس اتار لیا جاتا ہے پھر جب وہ توبہ کرتا ہے تو اس کو لوٹا دیا جاتا ہے۔گا۔
(ترغیب والترہیب ص ۲۱۶،ج۳)
۲۲۔ حضرت ابن عباسؓ فرماتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا جو قوم بھی ناپ تول میں کمی کرتی ہے اللہ تعالیٰ ان سے بارش کو روک لیتے ہیں اور جس قوم میں زنا عام ہو جاتا ہے اس میں کثرت سے موتیں ہوتی ہیں اور جس قوم میں لواطت عام ہو جاتی ہے اس میں زندہ زمین میں دھنسا دیا جانا عام ہو جاتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے